سات سالہ زایناب کی عصمت دری اور قتل کیس کا مقدمہ سننے کے فیصلے کا اعلان آج عمران علی نقشبندی کو چار دفعہ سزائے موت دی گئی.عدالت نے عمران کو سزائےموت کے بدلے، قتل کے لئے، قتل کے لئے اور سیکشن 7-اے ٹی اے کے جج سجاد احمد کے تحت موت کی سزا دی. اس کے علاوہ، ایک نابالغ کے ساتھ ایک غیرمعمولی کارروائی کرنے کے لئے وہ قید کی سزا 1 ملین روپے کے ساتھ سزا دی گئی ہے اور زینب کے جسم کو گندگی میں ڈوبنگ کرکے انہیں 7 سال سزا دی گئی ہے، پنجاب کے پراسیکیوٹر جنرل اختیشم قادر کو اطلاع دی گئی ہے.عمران علی قصور میں کم از کم آٹھ دیگر قیدیوں اور قصوروں کی معمولی لڑکیوں کے قتل میں ملوث .

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.