SHC issues contempt notice to K-Electric CEO respond by May 24

K Electric CEO

لوڈشیڈنگ پرکے الیکٹرک کوتوہین عدالت کانوٹس


کراچی سندھ ہائیکورٹ نے بجلی کی پیداوار نہ بڑھانے اور شہر میں غیر منصفانہ لوڈشیڈنگ پر کے الیکٹرک کے سی ای او سمیت دیگر کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیا۔سندھ ہائیکورٹ میں بجلی کی پیداوار نہ بڑھانے اور غیرمنصفانہ لوڈشیڈنگ کرنے کے معاملے پر سی ای اوکے الیکٹرک اور دیگرکے خلاف توہین عدالت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔درخواست میں مؤقف اپنایا گیا کہ سندھ ہائیکورٹ نےکے الیکٹرک کو پیداواری صلاحیت بڑھانے کا حکم دیا تھا،25 مارچ 2016 کو نیپرا نے کے الیکٹرک کو شوکاز جاری کیا، عدالت نے نیپرا کو شوکاز پر عمل درآمد کرنے کی ہدایت دی۔درخواست میں کہا گیا بن قاسم پلانٹ خرابی سے ثابت ہوگیا کہ کے الیکٹرک نے پیداواری صلاحیت میں اضافہ نہیں کیا جب کہ نیپرا بھی کے الیکٹرک سے متعلق اپنے فیصلے پر عمل درآمد نہیں کرا پا رہی۔درخواست میں استدعا کی گئی کہ کے الیکٹرک اور نیپرا حکام کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔عدالت نے درخواست پر سماعت کے بعد کے الیکٹرک کے سی ای او، چیف جنریشن اینڈ ٹرانسمیشن افسر، سی ای او ڈسٹری بیوشن اور ہیڈ آف ڈسٹری بیوشن کو توہین عدالت کےنوٹس جاری کردیے۔جب کہ چیئرمین نیپرا طارق سدوزئی اور وائس چیئرمین نیپرا کو بھی توہین عدالت کے نوٹس جاری کردیے گئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.