پولیس اپنے ہی بھائی بندوں پر ٹوٹ پڑی ، مظفرآباد میں پولیس نے ہی پولیس پر لاٹھی چارج کر دیا

آزاد کشمیر کے دارلحکومت مظفرآباد میں پولیس نے ہی پولیس پر لاٹھی چارج کر دیا جس سے درجنوں اہلکار زخمی ہوگئے ۔ مظفرآباد پریس کلب کے باہر پولیس اہلکار گتھم گتھاہو گئے اور ایک دوسرے پر لاتوں، ڈنڈوں، پتھروں اور گھونسوں سے حملے کے بعد کرسیاں بھی ماریں ۔ ایک طرف 500 سے زائد کنٹریکٹ پولیس اہلکار تھے جو 8 مہینوں سے تنخواہوں اور ملازمتیں مستقل کئے جانے کے منتظر تھے تو دوسری طرف مستقل پولیس اہلکار تھے ۔ ہنگامہ آرائی کے دوران درجنوں اہلکار زخمی ہوئے جب کہ 30 سے زائد کنٹریکٹ پولیس اہلکاروں کو حراست میں لے لیا گیا ۔
احتجاج کرنے والے پولیس اہلکاروں کا کہنا تھا کہ دس، دس سال سے محکمہ پولیس میں ملازم ہیں اور گزشتہ 8 مہینوں سے ان کی تنخواہیں بھی نہیں دی جا رہیں ۔ واقعے کے بعد ڈپٹی کمشنر کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا کہ احتجاجی پولیس اہلکاروں نے دفعہ 144 کی خلاف ورزی کی اور وردی میں احتجاج کرکے قانون شکنی کی ۔ بیان کے مطابق مظاہرین کو تنخواہوں کی فوری ادائیگی کی یقین دہانی بھی کرادی گئی تھی اس کے باوجوداحتجاج جاری رکھا گیا ۔
The post پولیس اپنے ہی بھائی بندوں پر ٹوٹ پڑی ، مظفرآباد میں پولیس نے ہی پولیس پر لاٹھی چارج کر دیا appeared first on Urdu News.