پاکستان اور بنگلا دیش کے درمیان سفارتی کشیدگی شروع ہوگئی ، دفترِ خارجہ نے بنگلا دیشی ہائی کمشنر کو واپس بھیجنے کی سفارش کر دی ہے ، بنگلا دیشی ہائی کمشنر کو واپس بھیجنے کا فیصلہ وزیراعظم عمران خان کریں گے ۔ ایک نجی ٹی وی چینل کے مطابق دفتر خارجہ نے وزیراعظم عمران خان کو بنگلا دیشی ہائی کمشنر کو واپس بھیجنے کی ، دفترخارجہ کی جانب سے اعلیٰ حکومتی عہدیداروں کو سمری ارسال کر دی گئی ہے ، یہ سفارش بنگلا دیش کیلئے پاکستان کی جانب سے نامزد ہائی کمشنر سیدہ ثقلین کو ایگریما نہ دینے کی بنیاد پر کی گئی ہے ، پاکستان نے گزشتہ آٹھ ماہ سے نئے ہائی کمشنر کے ایگریما کیلئے درخواست دے رکھی ہے ۔
سیدہ ثقلین کے ایگریما کی درخواست 26 جنوری کو دی گئی ، قواعد کے مطابق میزبان حکومت کو چھ ہفتے میں ایگریما دینا ہوتا ہے لیکن آٹھ ماہ گزر جانے کے باوجود بنگلا دیشی حکومت نے کوئی جواب نہیں دیا ، بنگلا دیش میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر رفیع الزمان صدیقی 18 فروری کو ریٹائر ہو گئے تھے ، دفترِ خارجہ حکام نے ایگریما نہ دینے پر تین بار بنگلا دیشی ڈپٹی ہیڈ آف مشن کو طلب کیا ، اس وقت ڈھاکہ میں پاکستانی سفارتی مشن قونصلر سطح کا افسر چلا رہا ہے ، بنگلا دیشی ہائی کمشنر کو واپس بھیجنے کا فیصلہ وزیراعظم عمران خان کریں گے ۔
The post پاکستان اور بنگلا دیش کے درمیان سفارتی کشیدگی ، دفترِخارجہ نے وزیراعظم سے بنگلہ دیشی ہائی کمشنر کو واپس بھیجنے کی سفارش کردی appeared first on Urdu News.