اسلام آباد (ویب ڈیسک) حکومت کی جانب سے مہنگائی کے بوجھ تلے دبی عوام پر ایک اور پہاڑ توڑے جانے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ تفصیلات کے مطابق یکم مئی سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 10 روپے فی لیٹر تک کے اضافے کا امکان ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں اضافے کے باعث پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں
میں بھی اضافہ ہو جائے گا۔ذرائع نے بتایا کہ پٹرول کی قیمت میں 8 روپے 80 پیسے فی لیٹر اضافے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے جبکہ ذرائع نے بتایا کہ یکم مئی سے ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 10 روپے فی لیٹر لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں 6 روپے 50 پیسے اور مٹی کے تیل کی قیمت میں 7 روپے فی لیٹر اضافے کا امکان ہے۔ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق سمری پر ورکنگ مکمل کر لی ہے۔قیمتوں کی حتمی سمری 29 اپریل کو وزارت خزانہ کو ارسال کی جائے گی۔
جس کے بعد وزیراعظم عمران خان کی مشاورت سے نئی قیمتوں کا اطلاق یکم مئی سے ہو گا۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے امکان کی یہ خبر عوام پر پہاڑ بن کر ٹوٹی، عوام نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ممکنہ اضافے پر حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بھی بنایا اور کہا کہ حکومت عوام کو ریلیف دینے اور اشیائے ضروریات کی قیمتوں میں کمی کرنے کی بجائے اُلٹا عوام پر ہی مہنگائی کا بوجھ ڈال رہی ہے جو ناقابل برداشت ہوتا جا رہا ہے۔یاد رہے کہ گذشتہ ماہ اکتیس مارچ کو وفاقی حکومت نے عوام پر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا بم گرایا تھا جس کے تحت پٹرول اور ہائی اسپیڈ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت میں 6 روپے جبکہ لائٹ اسپیڈ ڈیزل اور مٹی کا تیل کی قیمت میں 3، 3 روپے فی لیٹر تک کا اضافہ کیا گیا تھا۔
The post پاکستانیوتیارہوجائو،حکومت کی پٹرول کی قیمت میں 10روپے فی لیٹراضافے کی تیاریاں appeared first on Urdu News.