لاہور(ویب ڈیسک ) سابق وزیراعظم نوازشریف نے ضمانت سے قبل علاج کی غرض سے اسپتال جانے سے انکار کردیا۔ایڈیشنل چیف سیکریٹری پنجاب فضیل اصغر نےنجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ نوازشریف نے طبی سہولتوں کی فراہمی سے متعلق ہمارے خط کا زبانی جواب دے دیا ہے، سابق وزیراعظم نے ہمارے سامنے ڈیل رکھی ہےکہ وہ ضمانت سے قبل علاج کی غرض سے اسپتال نہیں جائیں گے۔ایڈیشنل چیف سیکریٹری کا کہنا تھاکہ نوازشریف کی اسپتال منتقلی کے لیے مختلف شخصیات کے ذریعے کوشش کی گئی، ان کے لیے اسپتال میں فل لوڈڈ ایمبولینس اور ڈاکٹر موجود رہتا ہے، ایمبولینس میں زندگی بچانے والی ادویات اور طبی سہولتیں موجود ہیں جب کہ نواز شریف کی بیرک میں ایک مشقتی کے علاوہ خصوصی گارڈ بھی تعینات کردیا گیاہے جو سابق وزیراعظم کی طبعیت سے متعلق جیل انتظامیہ کو آگاہ کرے گا۔فضیل اصغر نے مزید بتایا کہ نواز شریف کو صبح سے شام 5 بجے تک چہل قدمی کی اجازت ہوتی ہے، انہیں 5 بجے کے بعد سیل میں بند کردیا جاتا ہے۔یاد رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا کے باعث لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں قید ہیں۔دوسری طرف محکمہ داخلہ پنجاب نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کو سابق وزیراعظم نوازشریف سے کوٹ لکھپت جیل میں تحقیقات کی اجازت دیدی۔نجی ٹی وی نے ذرائع کے مطابق سے کہا ہے کہ محکمہ داخلہ پنجاب نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کو سابق وزیراعظم نوازشریف سے کوٹ لکھپت جیل میں تحقیقات کی اجازت دیدی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کابیان پیرکو قلمبند کیاجائےگا۔محکمہ داخلہ پنجاب کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی نوازشریف کابیان قلمبندکرنے جیل جائےگی۔ سابق وزیراعظم نوازشریف کابیان پیرکو قلمبند کیاجائےگا۔محکمہ داخلہ پنجاب کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی نوازشریف کابیان قلمبندکرنے جیل جائےگی۔
The post “ٹھیک ہے میں آپ کی ہر بات ماننے کو تیا ر ہوں مگر اس شرط پر” ۔۔۔ نواز شریف نے حکومت کو باقاعدہ ڈیل پیش کر دی appeared first on Urdu News.