اسلام آباد (اردو نیوز) وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے اپنی وزارت کے پہلے 100دنوں کی کارکردگی رپورٹ منگل کو جاری کر دی ۔ رپورٹ پہلے 100دنوں میں وزارت کی طرف سے کئے گئے کاموں،قانون سازی کے سنگ میلز، بین الاقوامی سنگ میل اور قومی ایکشن پلان مجموعی جائزہ پر مشتمل ہے ۔ اس میں وزارت کے ڈھانچے کی تفصیلات ، مختلف ذرائع سے ملنے والی معلومات ، سفارش کردہ قانون سازی اور وزارت کی طرف سے کی جانے والی تحقیق کے بارے میں تفصیلات بتائی گئی ہیں ۔
رپورٹ کے مطابق وزارت انسانی حقوق نے 9 قانونی بلوں کے مسودے بنائے جن میں زینب الرٹ بل، جسمانی سزا کا بل ، گھریلو کارکنوں کا بل ، معذوری بار ے بل، عیسائیوں کی شادی اور طلاق کا بل ، دی پنجاب سکھ انند کراج ، میرج بل، جبری طور پر لا پتہ افراد بارے بل ، قانونی امداد اور انصاف تک رسائی کا بل2018ء اور اینٹی ٹارچربل شامل ہیں ۔
اس کے علاوہ رپورٹ میں اضافی حقوق بارے موصولہ شکایات کی داد رسی ، آگاہی مہم بارے بتایا گیا ہے جبکہ تین تحقیق بھی رپورٹ کاحصہ ہیں اور ان تحقیقوں میں وراثت بارے تحقیق ، سٹریٹ چلڈرن اور قانون میں ہم آہنگی شامل ہیں جبکہ پہلے 100دنوں کے اندر اندر خواتین کی با اختیار ی کی پالیسی اور بچوں سے بدسلوکی بارے پالیسیاں بھی تشکیل دی گئی ہیں۔
The post موجودہ حکومت کے 100 دن وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں ایم مزاری نے وزارت انسانی حقوق کی کارکردگی بارے رپورٹ جاری کر دی appeared first on Urdu News.