لاہور:امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے مہنگائی ، بے روزگاری اور آئی ایم ایف کی ملکی معاملات میں کھلی مداخلت کے خلاف عید کے بعد ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نے چند ارب ڈالر کے لیے ملک کو آئی ایم ایف کے ہاتھوں گروی رکھ دیاہے، حکومت معاہدے کو پارلیمنٹ میں لے کر آئی نہ اس پر کسی سے مشاورت کی ، حکومت اپنے رویے سے پارلیمنٹ کو بے توقیر کر رہی ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے منصورہ میں ہونے والے مرکزی ذمہ داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں سیکرٹری جنرل امیر العظیم ، نائب امرا اور ڈپٹی سیکرٹریز جنرل نے شرکت کی ۔
سراج الحق نے کہا کہ حکومت نے قومی خزانے کی چابیاں آئی ایم ایف کے ہاتھ دے دی ہیں ، آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے معاہدوں پر عمل ہوا تو آئندہ چند سالوں میں 80 لاکھ سے زائد پاکستانی خط غربت سے نیچے چلے جائیں گے ، بجلی ، گیس ، تیل کی قیمتوںاور براہ راست ٹیکسوں میں اضافے سے سب سے زیادہ متاثر وہ غریب طبقہ ہوگا جو پہلے ہی غربت کی چکی میں پس رہا ہے ، روپے کی قدر میں مزید کمی ہوگی جس سے مہنگائی کا طوفان آئے گا اور قرضوں کا حجم بڑھ جائے گا۔
The post سینیٹر سراج الحق کا مہنگائی ، بے روزگاری اور آئی ایم ایف کی ملکی معاملات میں کھلی مداخلت کیخلاف عید کے بعد احتجاجی مظاہروں کا اعلان appeared first on Urdu News.