رہائی ملتے ہی شریف خاندان کو بھی بری خبر سنا دی گئی،ن لیگیوں نے جشن منانا بند کر دیا

اسلام آباد (نیوزڈیسک) نواز، مریم، صفدر کی سزا معطلی، قانون کی تلوار اب بھی سر پر لٹک رہی ہے، سینئر صحافی طلعت حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو عدالت سے موقع ملا ہے اور اب وہ جیل سے باہر آجائیں گے، اس طرح مسلم لیگ (ن) کو وقتی طور پر سکھ کا سانس لینے کا موقع ملے گا، تاہم یہ عارضی ریلیف ہے۔تفصیلات کے مطابق بدھ کے روز اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کی جانب سے 6 جولائی کو سنائی گئی بالترتیب 10 سال، 7 سال اور ایک سال قید کی سزا معطل کرکے انہیں رہا کرنے کا حکم سنا دیا۔
اس فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کی جانب سے اسے خوش آئند قرار دیا جارہا ہے۔اس حوالے سے سیاسی تجزیہ کار اور صحافی طلعت حسین نے بھی ردعمل دیا ہے۔ طلعت حسین نے سابق وزیراعظم نواز شریف،، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی ایون فیلڈ ریفرنس میں سنائی گئی سزاؤں کی معطلی کو عارضی سیاسی ریلیف قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ قانون کی تلوار اب بھی ان کے سر پر لٹک رہی ہے۔ طلعت حسین نے کہا ہے کہ نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو عدالت سے موقع ملا ہے اور اب وہ جیل سے باہر آجائیں گے، اس طرح مسلم لیگ (ن) کو وقتی طور پر سکھ کا سانس لینے کا موقع ملے گا۔طلعت حسین کی رائے میں اگرچہ یہ عارضی ریلیف ہے، لیکن موجودہ سیاسی صورتحال میں اس قسم کا عارضی ریلیف بھی مسلم لیگ ن کیلئے کسی بڑی کامیابی سے کم نہیں ہے۔
طلعت حسین کا مزید کہنا ہے کہ نیب کو سماعت کے دوران ثابت یہ کرنا تھا کہ نواز شریف ایون فیلڈ فلیٹس کے براہ راست مالک تھے یا نہیں اور اگر مالک تھے تو مریم نواز کی اونر شپ کس بناء پر ثابت ہوتی ہے۔جب نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے کوئی جواب نہیں دیا گیا تو پھر ججز نے اپنا فیصلہ دیا اور سزائیں معطل کردیں۔ طلعت حسین مزید کہتے ہیں کہ ایک پہلو یہ بھی ہے کہ نیب کے باقی 2 کیسز میں مریم نواز ملزم نامزد نہیں ہیں۔ لہذا اگر وہاں سے سزا ہوتی ہے تو سزا کے پھندے میں مریم نواز نہیں پھنسیں گی، صرف نواز شریف کو ہی سزا کا سامنا کرنا پڑے گا۔
The post رہائی ملتے ہی شریف خاندان کو بھی بری خبر سنا دی گئی،ن لیگیوں نے جشن منانا بند کر دیا appeared first on Urdu News.