لاہور (اردو نیوز) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے دیسی گھی کے نام پر بڑی جعل سازی کی کوشش ناکام بنا دی ، دیسی گھی کمپنیوں کی سالانہ چیکنگ مہم کے دوران ساہیوال میں موجود فیکٹری کا سیمپل 2 بار لیبارٹری تجزیے میں فیل پایا گیا، آخری سنوائی میں ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے کمپنی کا ایک کروڑ سے زائد مالیت کا 10 ہزار کلو ناقص گھی تلف کرنے کے احکامات جاری کیے۔
تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈاتھارٹی نے دیسی گھی کے نام پرزہر بیچنے والوں کی بڑی جعل سازی کی کوشش ناکام کر دی ہے۔فوڈ سیفٹی ٹیموں نے دیسی گھی کمپنیوں کی چیکنگ مہم کے دوران ساہیوال میں موجود فیکٹری کا سیمپل لیاتھا ۔سیمپل فیل ہونے کی بناء پر ڈی جی فوڈ اتھارٹی کیپٹن (ر) محمد عثمان کی ہدایت پر کمپنی کا تمام سٹاک فوری سیل کر دیا گیا تھا ۔
فیکٹری مالکان کی ڈی جی فوڈ اتھارٹی کے پاس ذاتی سنوائی میں کمپنی نمائندوں نے دوبارہ تجزیے کی درخواست کی تھی جسے منظور کر لیاگیا تھا۔ دوبارہ لیبارٹری تجزیے میں بھی دیسی گھی اور خام مال کے تمام نمونے فیل پائے گئے،نتائج آنے کے بعد آخری سنوائی میں تمام مال تلف کرنے کے احکامات جاری کیے گئے تھے
جس کے بعد تقریبا ایک کروڑ سے زائد مالیت کا 10 ہزار کلو ناقص گھی تلف کر دیا ہے۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ ناقص اجزاء سے بنا دیسی گھی ہزاروں افراد کی صحت کو متاثر کر سکتا تھا، ناقص اجزاء سے بنی اشیاء خاموش زہر قاتل اور متعدد موذی امراض کا سبب بنتی ہیں۔
The post دیسی گھی کے نام پر بڑی جعل سازی کی کوشش ناکام، ایک کروڑ سے زائد مالیت کا 10 ہزار کلو ناقص گھی پکڑا گیا appeared first on Urdu News.