وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے بنائی گئی ٹاسک فورسز کے ارکان کو کسی قسم کا معاوضہ نہیں دیا جا رہا ، حکومت کفایت شعاری کرکے 8 سے 10 ارب روپے کی بچت کرلے گی ۔ ایک نجی نیوز چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا کہ ہم کفایت شعاری کرکے سے 8 سے دس ارب کی بچت کرلیں گے ۔ مسلم لیگ ن کے دور میں قرضہ تین گنا بڑھا ہے ، کفایت شعاری کرنے سے عوام کو ایک مثبت پیغام جاتا ہے ۔
انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی میڈیا سی پیک کو متنازعہ بنانا چاہتا ہے ۔ فنانشل ٹائم نے رپورٹ سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کی ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم نے15 دن میں 15 ٹاسک فورسز بنائی ہیں اور ایک دن میں 15 لاکھ پودے لگائے ہیں ، تین ہفتے میں 22 سو کروڑ کا منصوبہ مکمل نہیں ہو سکتا ۔ انہوں نے کہا کہ اقتصادی پالیسی کے حوالے سے وزیر خزانہ اگلے ہفتے بتائیں گے ۔ بڑے ایشوز حکومت کی نظر میں ہیں لیکن پالیسی بنانے کیلئے کچھ وقت درکار ہوتا ہے ۔
انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ہاﺅس اگر پاکستان کے عوام کا ہے تو اس پر کیا پاکستان کے بچوں کا حق نہیں ہے ؟ وزیراعظم ہاﺅس کی بیک سائیڈ پر انٹری بری امام سے ہے اور اس کا ریڈ زون سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ٹاسک فورسز کو بڑے مخصوص ٹاسک دیئے گئے ہیں اور یہ ایڈ وائزری کردار ادا کریں گی ۔ اس وقت ٹاسک فورسز میں شامل کسی بھی شخص کو کوئی معاوضہ نہیں دیا جارہا ۔
The post حکومت کفایت شعاری کرکے 8 سے 10 ارب روپے کی بچت کرلے گی ، 15 دن میں 15 ٹاسک فورسز بنائیں اور اُن کو کوئی معاوضہ نہیں دیا جا رہا ، وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری appeared first on Urdu News.