حمزہ شہباز کی نیب لاہور میں پیشی ، اڑھائی گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی

سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کے صاحبزادے آج نیب لاہور کے سامنے پیش ہوئے جہاں ان سے اڑھائی گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی جس کے بعد وہ واپس روانہ ہو گئے ہیں تاہم شریف فیملی کیلئے یہ جمعہ کافی بہتر رہا کیونکہ اس مرتبہ کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق حمزہ شہباز اڑھائی گھنٹے نیب آفس میں موجود رہے ۔نیب نے حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کو آج طلب کیا تھا لیکن سلمان شہباز لندن میں موجود ہونے کے باعث پیش نہیں ہوئے ۔
یاد رہے کہ شریف فیملی کی چنیوٹ میں رمضان شوگر ملز کے لئے 20 کروڑ کی لاگت سے تعمیر کئے جانے والے پل کی بھی نیب تحقیقات کر رہا ہے اور اس کیس کے حوالے سے بھی حمزہ شہباز سے سوالات کئے جائیں گے ۔ یاد رہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کو سپریم کورٹ نے پاناما کیس میں جمعہ کے روز 28 جولائی 2017 کو نااہل قراردیدیا تھا جس کے بعد وہ وزارت عظمیٰ کے عہدے سے بھی فارغ ہو گئے تھے ۔
اس کے بعد احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں 6 جولائی 2018 کو نوازشریف ، مریم اور صفدر کو جرمانوں اور قید کی سزا سنائی تاہم اس کے بعد انہیں اسلام آباد ہائیکورٹ سے خوشخبری ملی اور تینوں کو 68 دن جیل میں رہنے کے بعد رہائی مل گئی ۔ تاہم سلسلہ یہاں ختم نہیں ہوا اور شہبازشریف کو نیب نے پانچ اکتوبر کر نیب میں صاف پانی سکینڈل میں پیشی کیلئے طلب کیا جہاں وہ پیش ہوئے تو انہیں آشیانہ ہاوسنگ سکینڈل میں گرفتار کر لیا گیا اور وہ تاحال نیب کی تحویل میں ہیں ۔
The post حمزہ شہباز کی نیب لاہور میں پیشی ، اڑھائی گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی appeared first on Urdu News.