اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) 27فروری کی صبح ایک بھارتی پائلٹ ونگ کمانڈر ابھی انندن نے اپنا مگ اکیس طیارہ بین الاقوامی سرحد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پاکستانی حدود میں داخل کیا جس پر پاک فضائیہ کے طیارے نے مگ اکیس کو نشانہ بنا کر ہٹ کیا اور بھارتی جنگی لڑاکا طیارہ تباہ ہوکر گر گیا او ر اس میں سوار پائلٹ کو حراست میں لے لیا گیا ۔ دو دن حراست میں رہنے کے بعد پاکستان نے امن پسند ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے بھارتی پائلٹ کو رہا کر دیا۔ پاکستان کی جانب سے بھارتی پائلٹ کی گھڑی، وردی اور طیارے کا ہیلمٹ اپنی تحویل میں رکھا گیا۔
تفصیلات کے مطابق پاکستان کی جانب سے گرفتاری کے بعد رہا کر دیے جانے والے بھارتی پائلٹ ابھینندن کے ہیلمٹ کو پاک فضائیہ کے میوزم کا حصہ بنا دیا گیا ہے۔بھارتی پائلٹ کو پاکستان کی فضائی حدود میں گھسنے پر پاک فضائیہ کے طیارے نے 27 فروری کو مار گرایا تھا۔ تاہم بعد ازاں بھارتی پائلٹ ابھینندن کو گزشتہ جمعہ کے روز واہگہ بارڈر پر بھارتی حکام کے حوالے کیا گیا تھا۔ بھارتی پائلٹ ابھینندن کو بھارت کے حوالے کرتے ہوئے پاکستان نے ابھینندن کا چشمہ، گھڑی اور ایک انگوٹھی واپس کردی تھی لیکن بھارتی پائلٹ کو اپنی وردی پستول اور ہیلمٹ پاکستان میں ہی چھوڑ کر جانا پڑے جسے پاکستان اپنی فتح کی نشانی کے طور پر رکھے گا۔
The post بھارتی پائلٹ ابھی نندن کی ایک ایسی چیز پاکستان کے قبضے میں آگئی کہ بھارتی حکام کے ابھی تک پسینے چھوٹ رہے ہیں appeared first on Urdu News.