بھارتی سپریم کورٹ نے کیسوں کی براہ راست کوریج کی اجازت دیدی ، ’’ فیصلے سے عدالتی نظام کا احتساب ہو گا ‘‘ ، چیف جسٹس دیپک مشرا

بھارت کی عدالت عظمیٰ نے کیسوں کی براہ راست کوریج کی اجازت دیدی ۔ بھارت کی سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے متفقہ طور پر کیسوں کی براہ راست کوریج کی اجازت دیتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے سے عدالتی نظام کا احتساب ہو گا ۔ بھارتی سپریم کورٹ کے چیف جسٹس دیپک مشرا نے اشارہ دیا تھا کہ کیسے ججز آخری سماعت پر فیصلہ دے سکتے ہیں کہ جب وہ سول سوسائٹی گروپ کی اپیل پر مخالف فریق کی درخواست مسترد کر دیں ۔
چیف جسٹس دپیک مشرا کا کہنا تھا کہ ہمیں براہ راست کوریج کرنے پر کوئی مسئلہ نہیں ہے ، ہماری عدالت سے ہی اس کا آغاز کیا جائے اور دیکھتے ہیں کہ یہ سلسلہ کیسا رہتا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم نے صرف ابتدا کی ہے ، ہم کسی چیز پر فیصلہ نہیں دے رہے اور وقت کے ساتھ اس میں بہتری آئے گی ۔
The post بھارتی سپریم کورٹ نے کیسوں کی براہ راست کوریج کی اجازت دیدی ، ’’ فیصلے سے عدالتی نظام کا احتساب ہو گا ‘‘ ، چیف جسٹس دیپک مشرا appeared first on Urdu News.