پشاور (ویب ڈیسک)خیبر پختونخوا کے گورنر شاہ فرمان نے کہاہے کہ میری وجہ سے وزیراعلیٰ کے ا ختیارات پراثرپڑاتومستعفی ہوجاوں گا، وزیراعلیٰ سے فاٹاانضمام پرمشاورت کرناکوئی گناہ نہیں، وزیراعلیٰ سے کوئی اختلاف نہیں ہے۔دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے شاہ فرمان نے کہاکہ حکومت کاسرکاری افسران کی ٹرانسفرپوسٹنگ کرنامعمول کی بات ہے،کے پی میں آئی جی،چیف سیکرٹری کی تبدیلی پر کوئی ناراض نہیں ،فاٹاکےانضمام کیلئے تجربہ کارآفیسرزیادہ مددگارثابت ہوں گے، پولیس ایکٹ کے تحت وزیراعلیٰ کے پاس ٹرانسفرپوسٹنگ کااختیارنہیں ہے ۔
انہوں نے کہا کہ قبائلی علاقوں میں خاصہ داراورلیویزفورس کی تعداد 28 ہزارہے، 28ہزاراہلکاروں کوفارغ نہیں کیاجاسکتا،پولیس میں ضم کرناہوگا،آئی جی،چیف سیکرٹری کاتبادلہ وزیراعلیٰ خیبرپختونخواکی درخواست پرہواہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ سے فاٹاانضمام پرمشاورت کرناکوئی گناہ نہیں وزیراعلیٰ سے کوئی اختلاف نہیں،میری وجہ سے وزیراعلیٰ کے ا ختیارات پراثرپڑاتومستعفی ہوجاوں گا۔
The post اگریہ کا م ہوا تو استعفیٰ دیدوں گا ، گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان نے واضح اشارہ دیدیا appeared first on Urdu News.