سابق بھارتی کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو پر عمران خان کی تقریب حلف برداری میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے گلے ملنے پر غداری کا مقدمہ درج کرنے کے لیے درخواست منظور کرلی گئی ہے ۔ سابق بھارتی کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو نے عمران خان کی بطور وزیراعظم تقریب حلف برداری میں شرکت کی تھی جہاں تقریب میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ان کا پرجوش استقبال کیا تھا اور دونوں بغل گیر بھی ہوئے تھے ۔
پاکستانی آرمی چیف سے گلے ملنے پر سدھو کو بھارت میں کافی تنقید کا سامنا ہے اور انتہا پسند ہندوؤں کی جانب سے ان کے خلاف احتجاجی مظاہرے کیے گئے ہیں ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق پاکستانی آرمی چیف سے گلے ملنے پر نوجوت سنگھ سدھو کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرنے کے لیے مقامی وکیل سدھر اوجھا نے ریاست بہار کے علاقے مظفر پور کی عدالت میں درخواست دائر کی ہے ۔
درخواست میں الزام لگایا گیا ہے کہ نوجوت سنگھ سدھو نے پاکستانی آرمی چیف کے گلے لگ کر بھارتی فوج کی تذلیل کی ہے اور ان کی اس حرکت سے بھارتیوں کی دل آزاری ہوئی ہے لہٰذا ان پر غداری کا مقدمہ درج کیا جائے ۔ عدالت نے وکیل کی درخواست منظور کرلی جس پر سماعت اگلے ہفتے کی جائے گی ۔ دوسری جانب بھارتی انتہا پسند جماعت بجرنگ دل نوجوت سنگھ کے سر کی قیمت پانچ لاکھ روپے مقرر کردی ہے ۔ انٹرنیٹ پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں انتہا پسند جماعت کے عہدیدار سدھو کو عمران خان کی تقریب حلف برداری میں شرکت کرنے پر شدید تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں ۔