آئی ایم ایف کی ضرورت ہی نہ رہی، دو دوست ممالک نے پاکستان کو 47ارب ڈالرز کی امداد دینے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد (نیوزڈیسک) چین اور سعودی عرب پاکستان کو 47 ارب ڈالرز کی امداد دینے کیلئے تیار، چین کی جانب سے سی پیک کے تحت مزید 42 ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کی جائے گی، جبکہ سعودی عرب پاکستان کو نرم شرائط پر 5 ارب ڈالرز کا قرضہ فراہم کرے گا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کی گرتی ہوئی معاشی صورتحال میں ایک مرتبہ پھر بہترین دوست چین اور سعودی عرب مدد دینے کیلئے تیار ہیں۔پاکستان میں 25 جولائی کے الیکشن کے بعد قائم ہونے والی نئی حکومت کو سنگین معاشی مسائل کا سامنا ہے۔ پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر خطرناک حد تک گر چکے ہیں۔ پاکستان کے کل زرمبادلہ ذخائر 16 ارب ڈالرز کی کم ترین سطح تک آ چکے ہیں۔
جبکہ دوسری جانب حکومت بھی کہہ چکی ہے کہ ملک چلانے کیلئے پیسہ نہیں ہے، خزانہ خالی ہے۔اس صورتحال میں ماہرین اقتصادیات کا کہنا ہے کہ پاکستان کو مجبور ہو کر مزید قرضوں کے حصول کیلئے آئی ایم ایف جانا پڑے گا۔تاہم وفاقی حکومت تمام تر مشکل حالات کے باوجود آئی ایم ایف کے پاس جانے کیلئے رضامند نہیں ہے۔ اس حوالے سے ایک نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان کو معاشی بحران سے نکالنے کیلئے پاکستان کے دیرینہ دوست چین اور سعودی عرب مدد فراہم کرنے کیلئے تیار ہیں۔ نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ چین اور سعودی عرب پاکستان کو 47 ارب ڈالرز کی امداد دینے کیلئے تیار ہیں۔
رپورٹ کے مطابق چین کی جانب سے سی پیک کے تحت مزید 42 ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔ جبکہ دوسری جانب سعودی عرب پاکستان کو نرم شرائط پر 5 ارب ڈالرز کا قرضہ فراہم کرے گا۔ رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے دورہ سعودی عرب اور چین کے دوران ان معاملات کو طے کر لیا جائے گا۔وزیراعظم عمران خان پیر کے روز تین روزہ سعودی عرب کے دورے کے سلسلے میں ریاض کیلئے روانہ ہوں گے۔ جبکہ وزیراعظم عمران خان نومبر کے ماہ میں چین کا اہم ترین دورہ کریں گے جہاں سی پیک سے متعلق کئی اہم فیصلے کیے جائیں گے۔
The post آئی ایم ایف کی ضرورت ہی نہ رہی، دو دوست ممالک نے پاکستان کو 47ارب ڈالرز کی امداد دینے کا اعلان کر دیا appeared first on Urdu News.