لاہور (نیوز ڈیسک ) انڈیا میں ہولی کئے تہوار کے موقع پر بنایا گیا ڈٹرجنٹ کا ایک اشتہار سوشل میڈیا پر وائرل ہو گیا ہے۔جس میں ایک ہندو بچی اپنے مسلمان دوست کی مدد کر رہی ہے۔اس اشتہار پر بھارت میں شدید تنقید کی جا رہی ہے۔سوشل میڈیا پر بائیکاٹ سرف ایکسل کا ہیش ٹیگ بھی ٹرینڈ کر رہا ہے۔یہ اشتہار ایک منٹ کے دورانیے پر مشتمل ہے جس میں ایک ہندو بچی ہولی کھیلتے ہوئے لوگوں کے درمیان سے اپنے مسلمان دوست کی مدد کرتی ہے ااور سارے رنگ اپنے اوپر پھینکوا دیتی ہے جب لوگوں کے پاس رنگ ختم ہو جاتے ہیں تو وہ اپنے مسلمان دوست کو اںے کا اشارہ کرتی ہے اور کہتی ہے کہ وہ اب کسی مشکل کے بغیر با آسانی نماز ادا کر سکتا ہے۔اس اشتہار میں بھارتی معاشرے میں ہندو مسلمانوں کے درمیان ہم آہنگی دکھانے کی کوشش کی گئی ہے۔ 27 فروری کو جاری کیے گئے اس اشتہار کو اب تک یوٹیوب پر 80 لاکھ سے زائد مرتبہ دیکھا جا چکا ہے۔بھارتی سوشل میڈیا صارفین نے اس اشتہار پر سخت تنقید کی ہے۔ایک صارف کا کہنا ہے کہ یہ احمقانہ حرکت ہے۔ہمیں پتہ ہے معلوم ہے کہ اپنے بچوں کو دینی تعلیم کیسے دینی ہے، مذہب میں واشنگ پاؤڈر کا کیا کام ؟ ایک صارف نے کہا کہ ہر بار ہندو لڑکیاں ٹارگٹ پر کیوں ہوتی ہیں؟ساتھ ہی ایک تصویر پوسٹ کی جس میں ایک مسلمان لڑکی کو ہولی لگائی جا رہی ہے۔ صارف نے کہا کہ ایسا کیوں نہیں ہو سکتا؟ آپ لو جہاد کو فروغ کیوں دے رہے ہیں؟ ایک صارف نے کہا کہ پہلے اپنے دماغ صاف کرو پھر میرے کپڑے صاف کرنا اییک صارف نے کہا کہ مستقبل میں ہندو لڑکے اور مسلمان لڑکی والا بھی کوئی اشتہار ہے کچھ صارفین نے تو اسے پاکستانی پراڈکٹ قرار دیا تاہم کچھ صارفین ایسے بھی ہیں جنہوں نے اس اشتہار کے لیے پسندیدگی کا بھی اظہار کیا ہے۔صارف نے کہا کہ سرف ایکسل کی اتنی جرات کیسے ہوئی کہ وہ رنگ،پیار،ہنسی،معصومیت اور خوش اخلاقی سب کچھ ایک منٹ کے اندر دکھا دیں۔یہ اس سب کام پر پانی پھیر دیتا ہے جو ہم نے اب تک کیا ہے۔کیا ہم احمق ہیں؟ میں دوبارہ کہہ رہا ہوں کہ اس اشتہار کو شئیر مت کیجیئے.ایک صارف نے اسے خوبصورت اشتہار قرار دے دیا۔

Har baar hindu girls hi target pe kyu hoti haiWhy not this??Why you creating love jehad#bycottSurfExcel pic.twitter.com/B2CB5wJdse
— kislay kumar (@kislay29) March 9, 2019

ویدیو دیکھیں:
The post ’’انڈیا میں ہولی کئے تہوار کے موقع پر۔۔۔۔۔‘‘ ہندو لڑکی نے مسلمان دوست کو ہولی کے رنگوں سے بچاتے ہوئے کیسے نماز پڑھنے کیلئے مدد کی؟ شدت پسند ہندوستانی تلملا اٹھے appeared first on Urdu News.