انڈونیشیا کے وسطی جزیرے لمبوک میں آنے والے زلزلے کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 14 ہو گئی ۔ غیر ملکی خبر رساں اداروں کے مطابق انڈونیشیا کے سیاحتی جزیرے لمبوک پر آنے والے 6.4 شدت کے زلزلے نے بڑے پیمانے پر تباہی مچائی ہے ۔ حکام کے مطابق زلزلے کے نتیجے میں 160 کے قریب افراد زخمی ہوئے ہیں جب کہ ہزاروں کی تعداد میں مکانات کو بھی نقصان پہنچا ہے ۔ انڈونیشیا کی ڈیزاسٹر ایجنسی کے ترجمان کے مطابق سب سے زیادہ ہلاکتیں لوگوں کو ملبے اور بلاک لگنے سے ہوئیں ۔ ترجمان کے مطابق اس وقت سب سے زیادہ توجہ پھنسے ہوئے لوگوں کو نکالنا اور انہیں بچانا ہے، بہت سے زخمیوں کو طبی امداد دی جا رہی ہے ۔ خیال رہے کہ انڈونیشیا میں اکثر زلزلے آتے رہتے ہیں کیونکہ یہ زلزلوں کی فالٹ لائن ’ رنگ آف فائر‘ پر موجود ہے ۔ دو ہزار پندرہ میں بھی انڈونیشیا کے جزیرے سماٹرا میں آنے والے 6.5 شدت کے زلزلے کے نتیجے میں درجنوں افراد ہلاک اور سینکڑوں بے گھر ہو گئے تھے ۔