اسلام آباد (ویب ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان ایک اور دیرینہ مسئلہ حل کرانے کے قریب ہیں،حکومت نے امریکہ میں قید پاکستان کی بیٹی ڈاکٹرعافیہ صدیقی کی رہائی اور انہیں پاکستان لانے کے لیے کوششیں تیز کر دی ہیں۔طالبانمذاکرات کے حتمی مراحل میں عافیہ صدیقی کی رہائی کے امکان روشن ہو گئے ہیں۔ سفارتی ذرائع کے مطابق امریکہ کو قیدیوں کی فہرست دی گئی ہے جب کہ امریکہ بھی کچھ قیدیوں کی رہائی پر سنجیدگی سے غور کر رہا ہے۔مذکورہ فہرست میں عافیہ صدیقی کا نام پہلے دس قیدیوں میں شامل ہے۔اعلی ترین سفارتی ذرائع نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے پاکستان نے کوششیں تیز کر دی ہیں۔تاہم سفارتی ذرائع نے یہ بتانے سے گریز کیا ہے کہ عافیہ صدیقی کو کب تک رہائی ملے گی اور وہ کب تک پاکستان آئیں گی۔
پاکستان پہلے ہی عافیہ صدیقی کی رہائی کی کوششیں کر رہا تھا اور اب طالبان کی طرف سے بھی مذاکرات میں عافیہ صدیقی کی رہائی کا مطالبہ کیا گیا ہے جس کے بعد اس بات کی امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ عافیہ صدیقی جلد ہی پاکستان میں ہوں گی کیونکہ امریکہ نے بھی طالبان سے قیدیوں کے ناموں کی لسٹ وصول کر لی ہے اور وہ اس پر سنجیدگی سے غور کر رہا ہے۔خیال رہے گذشتہ سال نومبر میں ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی ہیوسٹن میں پاکستانی سفارتی عملے سے ملاقات ہوئی تھی جس میں انہوں نے عمران خان کے نام پیغام بھی بھجوایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے ماضی میں میری بہت حمایت کی ہے وہ ہمیشہ سے میرے ہیرو رہے ہیں۔ اپنے خط میںوزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے عافیہ صدیقی کا کہنا ہے کہ امریکا میں میری سزا غیر قانونی ہے میں قید سے باہر نکلنا چاہتی ہوں۔۔عافیہ صدیقی کو جیسے ہی علم ہوا کہ عمران خانوزیر اعظم بن گئے ہیں تو انہوں نے عمران خان کے نام پیغام بھیجا تھا۔ان کی بہن نے بتایا تھا کہ تب میں دفتر خارجہ بھی گئی لیکن وہاں ملاقات نہ ہو سکی۔
The post امریکہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو رہا کرنے پر رضامند ، مگر بدلے میں پاکستا ن کو کیا کرنا پڑے گا ؟ اہم ترین ممکنہ ڈیل کی تفصیلات منظر عام پر آ گئیں appeared first on Urdu News.