امریکا میں پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی کی تعیناتی درست تھی یا نہیں ، اسلام آباد ہائیکورٹ نے آئندہ ہفتے فیصلہ سنانے کا عندیہ دے دیا ۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس اطہر من اللہ نے علی جہانگیر صدیقی کی تعیناتی کیخلاف درخواست کی سماعت کی ۔ علی جہانگیر صدیقی کے وکیل وسیم سجاد پیش نہ ہوسکے تاہم درخواست گزار شہزاد صدیق کی پیروی حسن مان ایڈووکیٹ نے کی ۔ جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ نئی حکومت کو یہ معاملہ دیکھنے دیا جائے کیونکہ یہ ایگزیکٹیو کا اختیار ہے ، ویسے بھی امریکا میں سفیر کی تعیناتی مستقل بنیادوں پر نہیں بلکہ کنٹریکٹ پر ہے اور ایگزیکٹو کسی بھی کنٹریکٹ ملازم کی تعیناتی کرسکتا ہے ۔
درخواست گزار کے وکیل حسن مان نے موقف اختیار کیا کہ ایگزیکٹو کے پاس ایسا کوئی اختیار نہیں ، درخواست میں رولز آف بزنس کا رول چار چیلنج کیا ہے ، علی جہانگیر صدیقی سفیر بننے کے اہل نہیں تھے ، ان کی تقرری صرف اور صرف سیاسی بنیادوں پر کی گئی ۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ علی جہانگیر کی تعیناتی کے حوالے سے درخواست پر فیصلہ آئندہ ہفتے کیا جائے گا ، عدالت نے کیس کی سماعت ایک ہفتے تک ملتوی کر دی ۔
The post امریکہ میں پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی کی تعیناتی درست تھی یا نہیں ، فیصلہ آئندہ ہفتے ہوجائیگا appeared first on Urdu News.