لاہور (اردو نیوز) وزیرخارجہ پاکستان شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان کی آئی ایم ایف کے ساتھ ہم آہنگی ہوگئی ہے،آئی ایم ایف کے ساتھ اشتراک کا فیصلہ ہوا ہے، بنیادی اصولوں پر پیشرفت ہوئی ہے،کمزور اور مالی مشکلات کے طبقے کو مضبوط بنائیں گے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق انہوں نے آج دبئی میں غیررسمی گفتگو میں بتایا کہ ملکی معیشت کی ترقی کاپروگرام لائیں گے۔
پروگرام میں ہونے والی کامیاب مفاہمت کو عملی جامہ پہنایا جائے گا۔شاہ محمود قریشی نے کہاکہ وزیراعظم اور وفد کی آئی ایم ایف سے ملاقات مفید رہی۔آگے بڑھنے کے بنیادی اصول تک پہنچ گئے ہیں۔شاہ محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان کی آئی ایم ایف کے ساتھ ہم آہنگی ہوگئی ہے۔آئی ایم ایف کے ساتھ اشتراک کا فیصلہ ہوا ہے۔
انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کے ساتھ بنیادی اصولوں پر پیشرفت ہوئی ہے۔ کمزور اور مالی مشکلات والے طبقات کو مضبوط بنائیں گے۔ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان اور آئی ایم ایف کی ڈائریکٹر کے درمیان آج دبئی میں ملاقات ہوئی۔ ملاقات میں پاکستان کی معاشی استحکام کیلئے بیل آؤٹ پیکج سے متعلق بات چیت کی گئی ہے۔ اس موقع پرایم ڈی آئی ایم ایف نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان سے اچھی اور تعمیری ملاقات ہوئی۔فیصلہ کن پیکج اور معاشی اصلاحات سے سے معاشی استحکام حاصل کیا جاسکتا ہے۔
پاکستان کی مدد کرنے کوتیار ہیں۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان کے ساتھ تعاون کو سراہتے ہیں۔ حکومت پاکستان معاشی استحکام کیلئے پرعزم ہے۔ حکومت معاشی اصلاحات کر رہی ہے۔ مزید برآں وزیراعظم عمران خان سے آج دبئی میں اہم عالمی رہنماؤں نے ملاقاتیں کی ہیں، یہ ملاقاتیں دبئی میں منعقدہ ورلڈ گورنمنٹ سمٹ کے موقع پر کی گئیں۔
وزیراعظم عمران خان سے لبنان کے وزیراعظم سعد الدین رفیق الحریری نے بھی ملاقات کی ، جس میں دو طرفہ تعلقات اور خطے کی صورتحال پربات چیت کی گئی۔دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ تعلقات کو مزید فروغ دینے کے عزم کا اعادہ کیا۔ واضح رہے وزیر اعظم عمران خان آج دبئی کے ایک روزہ دورے پر ہیں۔ وزیراعظم ساتویں ورلڈ گورنمنٹ سمٹ میں شرکت کیلئے دبئی گئے ہیں۔
اس موقع پر وزیراعظم عمران خان اور ابو ظہبی کے ولی عہد شیخ محمدبن زید کے درمیان بھی ملاقات ہوئی ہے۔ وزیراعظم کا دبئی پہنچنے پرشاندار استقبال کیا گیا۔ وزیراعظم پاکستان عمران خان نے ورلڈگورنمنٹ سمٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خوشی ہے اسلامی دنیا میں بھی اس طرح کی کانفرنس ہورہی ہیں۔60 کی دہائی میں پاکستان تیزی سے ترقی کرتا ہوا ملک تھا۔
وقت کے ساتھ ہمارے میں ترقی کی رفتار کم ہو گئی۔ جتنا ٹیلنٹ پاکستان میں دیکھا اتنا کہیں نہیں دیکھا۔ ہمیں اپنے ٹیلنٹ کو آگے لانا ہوگا۔معاشی اصلاحات کررہے ہیں جس سے سرمایہ کارپاکستان کا رخ کررہے ہیں۔ سرمایہ کاری کیلئے آسان نظام لیکر آرہے ہیں۔اصلاحات مشکل ہیں لیکن اصلاحات کرنا ضروری ہے۔ کیونکہ جب اصلاحات کی جاتی ہیں تولوگوں کوپریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
بہتر طرز حکمرانی ہی معاشی ترقی کی بنیاد ہے۔پاکستان کو بہت اوپر لے کرجانا چاہتا ہوں۔ انہوں نے غیرملکی سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے یہ بہترین وقت ہے۔ سیاحت کے بے شمار مواقع ہیں ۔ سیاحت کے شعبے کو فروغ دیں گے۔پاکستان سیاحت کیلئے دنیا بھر میں بہترین ملک ہے۔
The post آئی ایم ایف کے ساتھ ہم آہنگی ہوگئی ہے، شاہ محمود قریشی appeared first on Urdu News.